صدرمستعفی نہ ہوئیں توموخذاےکی قرادادجمع کروائی جائےگی،اپوزیشن

جنوبی کوریا کے دفتر استغاثہ نے کہا ہے کہ ایسا محسوس ہوتا ہے کہ خاتون صدر پارک گُون ہَے کرپشن اسکینڈل میں شریک ہیں۔ اس دفتر نے صدر کی قریبی دوست چوئی سُون اِل اور ایک دوسرے صدارتی مشیر پر اختیارات کے ناجائز استعمال کی فردجرم عائد کر دی ہے۔ ان پر الزام ہے کہ ان دونوں افراد نے بعض مالی کمپنیوں کو مجبور کیا کہ وہ ایک خیراتی فاؤنڈیشن کے لیے چندہ مہیا کریں۔ فاؤنڈیشن کو ہونے والا مالی فائدہ ہی کرپشن اسکینڈل کی جڑ تصور کیا گیا ہے۔ جنوبی کوریائی اپوزیشن نے ایک مشترکہ بیان میں کہا ہے کہ اگر صدر خود سے مستعفی نہ ہوئیں تو اُن کے مواخذے کی قرارداد جمع کرائی جا سکتی ہے۔پچھلے 4ہفتوں سے جنوبی کوریا کے عوام کرپشن کے اسکینڈل  کیخلاف سڑکوں پر ہیں،معافی مانگنے کے باوجود عوام صدرکو رعایت دینے کو تیار نہیں ہیں۔اور دفتر استغاثہ کے بیان سے شاید مظاہرین کا غصہ کچھ کم ہوجائے

You might also like More from author

Leave A Reply

Your email address will not be published.