جواہرلال نہرو یونیورسٹی سے لاپتہ طالب کا معاملہ

جواہر لال نہرو یونیورسٹی (جے این یو) سے لاپتہ طالب علم نجیب احمد کا معاملہ طول پکڑتا جا رہا ہے ۔  نجیب کو ڈھونڈنے کا مطالبہ کرتے ہوئے آج جے این یو کے طلبہ نے جنتر منتر، جن پتھ اور دیگر جگہوں پر مظاہرہ کیا ۔ اس دوران طالب علموں کی دہلی پولیس سے جھڑپ بھی ہو گئی ۔ ہنگامے کو دیکھتے ہوئے دہلی پولیس نے کئی طالب علموں کو حراست میں لے لیا ، جنہیں مایاپوری اور مندر مارگ تھانے لے جایا گیا. دہلی پولیس جب حراست میں لئے گئے طالب علموں کو تھانے لے جا رہی تھی ، تو دہلی کے کئی علاقوں میں جام لگ گیا ۔ اس درمیان دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے ٹویٹ کیا کہ نجیب کی ماں کو کیوں حراست میں لیا گیا ، میں ان سے ملنے تھانے جا رہا ہوں ۔  وہیں پولیس نے نجیب کی ماں کو حراست میں لینے سے انکار کر دیا

سب سے پہلے دہلی کے وزیر اعلی کیجریوال طالب علم نجیب کے لاپتہ ہونے کے معاملے میں صدر پرنب مکھرجی سے بھی ملنے گئے تھے۔جے این یو کے طلبہ اور گمشدہ طالب علم نجیب کے اہل خانہ نے کیجریوال سے ملاقات کر کے اس معاملہ میں مداخلت کی اپیل کی ۔ نجیب ایم ایس سی بایو ٹیکنالوجی فرسٹ ائیر طالب علم ہے ، جو 15 اکتوبر سےغائب ہے.

You might also like More from author

Leave A Reply

Your email address will not be published.