یورپی یونین میں شمولیت کے متعلق جذباتی وابستگی نہیں ہونی چاہیے،ترک صدر

صدراردوان کا کہنا تھا کہ وہ اپنے روسی ہم منصب ولادی میر پوتن اور قزاقستان کے صدر نور سلطان نذربائیوف سے اس حوالے سے بات جیت کر چکے ہیں۔یہ دونوں ممالک شنگھائی پیکٹ کے ممبران ہیں جس میں چین، کرغستان اور تاجکستان شامل ہیں۔ ۔ترک اخبار حریت اور دیگر ذرائع ابلاغ کے مطابق صدر اردوغان نے ازبکستان میں سے پرواز کرتے ہوئے ترک صحافیوں کو بتایا کہ ترکی کو یورپی یونین کے مطابق میں اطمینان کرنا چاہیے اور اس میں شمولیت سے متعلق جذباتی وابستگی نہیں رکھنی چاہیے۔ ان کا کہنا تھا کہ شاید کچھ لوگ تنقید کریں لیکن میں اپنی رائے دیتا ہوں۔ مثال کے طور پر میں کہتا ہوں ترکی سنگھائی 5 میں شمولیت کیوں نہ اختیار کرے؟خبر رساں ادارے روئٹرز کے مطابق صدر اردووان نے ترک عوام سے یورپ کے ساتھ تعلقات کے حوالے سے رواں سال کے اختتام تک تحمل کا مظاہرہ کرنے کا کہا ہے اور ساتھ میں یہ بھی عندیہ دیا ہے کہ آئندہ سال 2017 میں یورپی رکنیت کے حوالے سے ریفرینڈم کوایا جا سکتا ہے۔

 

You might also like More from author

Leave A Reply

Your email address will not be published.