افغانستان، مزارشریف میں جرمن قونصل خانے پر خودکش حملہ

افغان صوبے مزار شریف میں جرمن قونصل خانے کے قریب دھماکہ ہوا ہے جس کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک جبکہ افغانستان کے حال ہی میں تاجکستان کیلئے تعینات کیے جانے والے سفیر سمیت 100 افراد زخمی ہوگئے ہیں

مزار شریف میں زور دار دھماکہ ہوا ہے۔جس وقت دھماکہ ہوا وہ جرمن قونصل خانے سے ایک کلومیٹر کی دوری پر ایک بلڈنگ میں موجود تھے لیکن دھماکہ اتنا شدید تھا کہ پوری عمارت کے شیشے ٹوٹ گئے جبکہ کئی درخت بھی گرگئے اور لوگوں میں بھگدڑ مچ گئی۔ دھماکے کی وجہ سے پھیلنے والا دھواں اتنا زیادہ ہے کہ کچھ بھی نظر نہیں آرہا.دھماکے کے بعد جرمن قونصل خانے میں موجود سکیورٹی سٹاف نے شدید قسم کی فائرنگ بھی کی ہے تاکہ لوگ عمارت کے اندر داخل نہ ہوسکیں۔ بلخ ہسپتال میں موجود ڈاکٹروں کا کہنا ہے کہ دھماکے کے نتیجے میں ایک شخص ہلاک جبکہ 100 شدید زخمی افراد کو اسپتال لایا گیا ہے۔دوسری جانب دھماکے کے نتیجے میں حال ہی میں تاجکستان کیلئے تعینات کیے جانے والے افغان سفیر بھی زخمی ہوگئے ہیں جنہیں اسپتال منتقل کردیا گیا ہے۔ افغان حکام کا کہنا ہے کہ خودکش حملہ آور نے بارود سے بھری گاڑی جرمن قونصل خانے کی دیوار سے ٹکرا دی جس سے زورداردھماکہ ہوا۔ دھماکے سے قبل فائرنگ کی آوازیں سنائی دیں اور اس خودکش حملے میں متعدد افراد زخمی ہوئے ہیں۔طالبان نے جرمنی کے قونصل خانے پر ہونے والے حملے کی ذمہ داری قبول کی ہے۔ان کا کہنا ہے کہ قونصل خانے پر حملہ قندوز میں اتحادی افواج کے فضائی حملے میں عام شہریوں کی ہلاکت کا ردعمل ہے۔

You might also like More from author

Leave A Reply

Your email address will not be published.