اعلیٰ سطح کا اجلاس

گورنر ہاوس کوئٹہ میں وزیراعظم د نواز شریف کی زیر صدارت اجلاس میں اہم فیصلے کرلیئے گئے۔ اجلاس میں ایف سی اور پولیس حکام نے پولیس ٹریننگ کالج پرحملے اور دہشت گردوں کے خلاف آپریشن سے متعلق بریفنگ دی گئی۔ اجلاس میں بتایا گیا کہ بلوچستان میں موجود کالعدم تنظیموں کو افغانستان سے آپریٹ کیا جاتا ہے، تاہم کوئٹہ اور دیگر علاقوں میں موجود دہشت گردوں کے سہولت کاروں کے خلاف فوری کارروائی عمل میں لائی جائیگی۔ اجلاس کے دوران بلوچستان حکومت کی جانب سے غیر قانونی رہائش پذیر افغان مہاجرین کے خلاف کارروائی اور رجسٹرڈ افغان مہاجرین کو پناہ گزین کیمپوں تک محدود رکھنے کی سفارش کی گئی۔ اجلاس میں آرمی چیف جنرل راحیل شریف، وزیرداخلہ چوہدری نثار، ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹننٹ جنرل رضوان اختر، مشیر قومی سلامتی ناصر جنجوعہ، کمانڈر سدرن کمانڈ لیفٹننٹ جنرل عامر ریاض گورنر بلوچستان محمد خان اچکزئی، وزیراعلیٰ ثناء اللہ زہری،اور دیگراعلیٰ حکام شریک تھے

وزیراعظم نواز شریف کی زیرصدارت کوئٹہ میں ہونے والا اعلیٰ سطح کا اجلاس ختم ہوگیا۔ اجلاس میں سیاسی اور عسکری قیادت کی جانب سے دہشت گردوں کے خلاف آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا فیصلہ کرلیا گیا۔

سیاسی اور عسکری قیادت کا دہشت گردوں کے خلاف آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا فیصلہ،،، دہشت گردوں کے سہولت کاروں کے خلاف فوری کارروائی کی جائیگی،،، بلوچستان میں موجود کالعدم تنظیموں کو افغانستان سے آپریٹ کیا جاتا ہے،،،، گورنر ہاؤس کوئٹہ میں وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس  میں فیصلے

گورنر ہاؤس کوئٹہ میں وزیر اعظم نواز شریف کی زیر صدارت اعلیٰ سطح کا اجلاس

سیاسی اور عسکری قیادت کا دہشت گردوں کےخلاف آہنی ہاتھوں سے نمٹنے کا فیصلہ

بلوچستان میں موجود کالعدم تنظیموں کوافغانستان سےآپریٹ کیاجاتا ہے

دہشت گردوں کےسہولت کاروں کےخلاف فوری کارروائی عمل میں لائی جائیگی

You might also like More from author

Leave A Reply

Your email address will not be published.