ذہنی مریض امداد علی کی سزائے موت پر عملدرآمد روک دیا گیا

عدالت نے پھانسی پر عمل مجرم امداد علی کے ذہنی مریض ہونے کی بنیاد پر روکا۔۔۔۔یاد رہے کہ 50 سالہ امداد کو 2002 میں ایک عالم دین کو قتل کرنے کے الزام میں سزائے موت سنائی گئی تھی۔۔۔چیف جسٹس انور ظہیر جمالی پر مشتمل سپریم کورٹ کے 3 رکنی بینچ نے امداد علی کی اہلیہ کی جانب سے دائر کی گئی نظر ثانی اپیل پر سماعت کی۔۔۔بعدازاں سپریم عدالت نے پراسیکیوٹر جنرل پنجاب، ایڈووکیٹ جنرل پنجاب اور اٹارنی جنرل کو نوٹس جاری کرتے ہوئے کیس کی سماعت نومبر کے دوسرے ہفتے تک ملتوی کری

سپریم کورٹ نے سزائے موت کے مجرم امداد علی کی پھانسی روک دی۔

سپریم کورٹ بنچ میں سماعت۔۔۔ ذہنی مریض  امداد علی کی سزائے موت پر عملدرآمد پندرہ روز کے لئے  روک دیا گیا

You might also like More from author

Leave A Reply

Your email address will not be published.