جعلی شناختی کارڈ بنانے پرشربت گل کو جعلسازی کے الزامات کے تحت پکڑا گیا

پشاور‘ فیڈرل انویسٹی گیشن ایجنسی (ایف آئی اے) نے جعلی شناختی کارڈ بنانے پر عالمی شہرت یافتہ افغان خاتون شربت گل کو پشاور سے گرفتار کرلیا۔ایف آئی اے ذرائع کے مطابق شربت گل کو جعلسازی کے الزامات کے تحت گرفتار کیا گیا۔ذرائع کے مطابق شربت گل پر پاکستان پینل کوڈ کی دفعات 419 اور 420 اور انسداد کرپشن کی دفعہ 5 (2) کے تحت الزامات عائد کیے گئے۔ذرائع نے بتایا کہ شربت گل دوہری شہریت کی حامل تھی اور ایف آئی اے نے اس کا پاکستانی اور افغان شناختی کارڈ قبضے میں لے لیا ہے۔ایف آئی اے ذرائع نے مزید بتایا کہ شربت گل کو شناختی کارڈ جاری کرنے والا افسر آج کل کسٹم میں بحیثیت ڈپٹی کمشنر کام کر رہا ہے اور اس نے اس کیس میں ضمانت قبل از گرفتاری کرا رکھی ہے۔اس سے قبل رواں ماہ 21 اکتوبر کو ایف آئی اے نے شربت گل کو غیرقانونی طور پر پاکستانی شناختی کارڈ جاری کرنے کے الزام میں نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) کے 3 ڈپٹی ڈائریکٹرز کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔مقدمے میں جعل سازی اور دھوکہ دہی کے ذریعے افغان خاتون شربت گل کو پاکستانی شناختی کارڈ جاری کرنے کے الزامات کے تحت پاکستان پینل کوڈ کی دفعات 409، 419، 420، 468، 471 اور 109 شامل کی گئی تھیں‘یاد رہے کہ گذشتہ برس فروری میں اس بات کا انکشاف ہوا تھا کہ نادرا نے افغان خاتون شربت گل عرف شربت بی بی سمیت تین افغان مہاجرین کو پاکستانی شناختی کارڈ جاری کردیئے۔نادرا کے حیات آباد آفس کے ذرائع نے کو بتایا تھا کہ اعلیٰ افسران نے قواعد و قوانین کی خلاف ورزی کرتے ہوئے افغان شہری رحمت گل کی 46 سالہ بیوی شربت گل یا شربت بی بی کے ساتھ ساتھ ان کے 2 بیٹوں رو¿ف خان اور ولی خان کے لیے گزشتہ سال ایک ہی دن شناختی کارڈ جاری کیے تھے۔یہ معاملہ سامنے آنے کے بعد افغان شہریوں کو شناختی کارڈ جاری کرنے کے حوالے سے انکوائری کا حکم دیا گیا تھا۔

You might also like More from author

Leave A Reply

Your email address will not be published.