پولیس ٹریننگ کالج حملہ‘ چار گھنٹے کے آپریشن کے بعد یرغمال 250 زیرتربیت اہلکار بازیاب

5

کوئٹہ‘ سریاب روڈ پر پولیس ٹریننگ کالج پر حملے میں چار گھنٹے کے آپریشن کے بعد یرغمال بنائے گئے ڈھائی سو زیرتربیت اہلکاروں کو بازیاب کرالیا گیا۔نجی ٹی وی کے مطابق رات کے اندھیرے میں دہشت گرد ٹریننگ سینٹر میں گھسے اوراندھا دھند فائرنگ کر دی۔اطلاع ملتے ہی سکیورٹی فورسز کی بھاری نفری نے سینٹر پہنچ کر آپریشن شروع کر دیا۔ٹریننگ سینٹر سے وقفے وقفے سے فائرنگ اور دھماکوں کی آوازیں آتی رہیں۔ پاک فوج ،ایف سی اور پولیس کمانڈوز نے جرات مندی سے دہشت گردوں کا مقابلہ کیا، جانیں قربان کیں اور زخموں سے چور ہو ئے لیکن دہشت گردوں کو ڈھیر کر دیا‘دو دہشتگردوںے خودکش دھماکے کیے جبکہ تیسرا مقابلے میں مارا گیا۔ پاک فوج اور ایف سی کے کمانڈوز نے چار گھنٹے طویل آپریشن کے بعد ٹریننگ سینٹر کو کلیئر قرار دے دیا۔کمانڈر سدرن کمانڈ عامر ریاض کیانی ، آئی جی ایف سی میجر جنرل شیرافگن اورپولیس حکام بھی ٹریننگ سینٹر پہنچے۔آپریشن کے دوران یرغمال بنائے گئے اہلکاروں کو بازیاب کرالیا گیا۔۔کمپاو¿نڈ میں لگائی گئی آگ بجھا ئی گئی۔زخمی افراد کو سول اور دیگر اسپتالوں میں پہنچایا گیا۔ کوئٹہ کے تمام اسپتالوں میں ایمرجنسی لگا دی گئی۔حکام نے تمام زخمیوں کے بہترین علاج معالجے کی ہدایات جاری کیں‘آپریشن کے دوران ا±نسٹھ اہلکاروں نے جام شہادت نوش کیا جبکہ یرغمال بنائے گئے دوسوپچاس اہلکاروں کو بازیاب کرالیا گیا۔ پولیس ٹریننگ سینٹر پر حملے میں پاک فوج کے چار جوانوں سمیت ایک سوبائیس اہلکار زخمی ہوئے۔ زخمی ہونے والوں میں 9 پولیس اہلکار بھی شامل ہیں۔

You might also like More from author

Leave A Reply

Your email address will not be published.